ادب

علی عباس جلالپوری ۔ آفتاب خرد افروزی

علی عباس جلالپوری ۔ آفتاب خرد افروزی

پروفیسر ظفر علی خان علی عباس جلالپوری نے پوری زندگی مطالعہ وتدریس وتحقیق وتصنیف میں گزاری۔ وسیع مطالعے اور تحقیق کے نتیجے میں یہ حقیقت ان پر آشکار ہوئی کہ مشرقی اقوام بالعموم او رمسلم اقوام بالخصوص، اس لئے پس ماندہ اور دست نگر ہیں کہ وہ ابھی تک زرعی معاشرے کے فرسودہ معتقدات اور اوہام میں جکڑی ہوئی ہیں۔ […]

· 2 comments · ادب
تشدد کا وسوسہ

تشدد کا وسوسہ

رزاق سربازی کیا آپ اپنے اردگرد موجود تشدد کو سمجھتے ہیں؟ آپ اگر اس کی ماہیت کو نہیں سمجھتے، لیکن اس کی بے سروپا مذمت کرتے ہیں ، تو یہ سیاسی پارسائی دکھانے کے ڈھونگ کے سوا کچھ نہیں. شاید ، ممکن ہے، آپ نے سوچا نہ ہو، درحقیقت ہم جس ساعت بلاتفریق تشدد کیخلاف ردعمل دکھارہے ہوتے ہیں۔ دراصل […]

· 0 comments · ادب
میڈیا۔ یوری پیڈیز کا ادبی شاہکار

میڈیا۔ یوری پیڈیز کا ادبی شاہکار

جاوید اختر بھٹی یوری پیڈیز یونان قدیم کے تین بڑے المیہ نگاروں میں شمار کیا جاتا ہے۔ وہ حضرت عیسیٰ ؑ کی ولادت سے 480سال قبل جزیرہ سلامس میں ٹھیک اس دن پیدا ہوا جب اہل یونان نے ایران کو شکست دی۔ اس کا باپ منی سارکس ایک مے خانے کا منتظم تھا اور ماں، کلی ٹو،جڑی بوٹیاں بیچتی تھی۔ […]

· 0 comments · ادب
روئیداد خان کی روداد

روئیداد خان کی روداد

پروفیسر ڈاکٹر پرویز پروازی روئید اد خاں کی خود نوشت’’ پاکستان ۔خواب پریشاں ‘‘ آکسفورڈ یونیورسٹی پریس والوں کی جانب سے پہلی بار ۱۹۹۷ میں چھپی تھی ۔دس سال گزرنے کے باوجود اب تک اس خود نوشت کا تذکرہ جہاں تہاں ہو تا رہتا ہے ۔کیونکہ یہ ایک ایسے بیوروکریٹ کی خود نوشت ہے جو مختلف حکومتوں میں مختلف اہم […]

· 1 comment · ادب
یہاں منٹو دفن ہے

یہاں منٹو دفن ہے

مشرقی پنجاب کے مہان کہانی کار و ڈرامہ نگار بلونت گارگی کی پنجابی کی مشہور کتاب’’حسین چہرے‘‘ سے ایک خاکہ ترجمہ: الفت تنویر بخاری (دوسری و آخری قسط) بازار میں چمک دمک او رگہماگہمی تھی۔ سیخ کباب، پان، پھولوں کے ہار اور تماش بینوں کی رونق۔ اس گہماگہمی میں عجیب سرسراہٹ، خاموش اشارے او رگھورنے والی نظریں تھیں۔ انتہائی خاموشی […]

· 0 comments · ادب
قرۃالعین حیدر کے اپنے دوست خالد حسن کے نام، نامے سے اقتباس

قرۃالعین حیدر کے اپنے دوست خالد حسن کے نام، نامے سے اقتباس

(ترتیب: سلمان آصف) بمبٔی؛ ٩اگست ٨١ “انتظار حسین نے یہ ہجرت کا ریکٹ چلا رکھا ہے– اس کو cash کرتے، کرتے اور اس پر thrive کرتے، کرتے وہ ‘عہد ساز،‘ ‘تاریخ ساز‘ اور ‘عظیم افسانہ نگار‘ بن گئے– بھائی، یہ کیا قصّہ ہے کہ تم جیسے صاحب نظر معقول لوگ بھی یہ سمجھنے پر تلے رہتے ہیں کہ افسانہ نگار […]

· 0 comments · ادب
البرٹو موراویا

البرٹو موراویا

لیاقت علی ایڈوکیٹ اردو ادب کے قارئین انگریزی ،روسی اور فرانسیسی زبانوں کی شاہکارادبی تخلیقات سے تو واقف ہیں کیونکہ ان زبانوں کے چیدہ چیدہ ادیبوں کے ناولوں اور کہانیوں کے اردو تراجم موجود ہیں لیکن اردو ادب کے ایسے قارئین کی تعداد بہت کم ہو گی جو بیسویں صدی کے اطالوی ادب کے عظیم ناول نگار،کہانی کار اورناقدالبرٹو موراویا […]

· 0 comments · ادب
ڈاکٹر داؤد رہبر کی پراگندہ طبع لوگ

ڈاکٹر داؤد رہبر کی پراگندہ طبع لوگ

ڈاکٹر پرویز پروازی ڈاکٹر داؤد رہبر ،لاہور کے ایک علمی خانو ادہ کے چشم و چراغ ہیں۔ان کے والد گرامی پروفیسر ڈاکٹر شیخ محمداقبال اورئینٹل کالج لاہور کے ناموراساتذہ میں سے تھے۔داؤدرہبر کی تعلیم بھی گورنمنٹ کالج اور اورئینٹل کالج لاہور میں ہوئی کیمبرج یونیورسٹی سے آپ نے’’تنز یہہ کا مسئلہ قرآن کی روشنی میں ‘‘پر مقالہ لکھ کر پی […]

· 0 comments · ادب
جاوید اختر کا ایک اہم ادبی کارنامہ

جاوید اختر کا ایک اہم ادبی کارنامہ

ظفر آغا جاوید اختر بھی کچھ عجیب و غریب شخصیت کے حامل ہیں ۔ آپ فرمائیں کہ بھلا جاوید اختر میں ایسی کیا بات ہے کہ جس کی وجہ سے ان کو عجیب و غریب کہا جائے ۔ ارے بھائی وہ تو ایک مشہور و معروف فلمی دنیا کی ہستی ہیں ،جس کو انگریزی میں فلم پرسنلٹی کہا جاتا ہے۔ […]

· 0 comments · ادب
یہاں منٹو دفن ہے

یہاں منٹو دفن ہے

مشرقی پنجاب کے مہان کہانی کار و ڈرامہ نگار بلونت گارگی کی پنجابی کی مشہور کتاب’’حسین چہرے‘‘ سے ایک خاکہ ترجمہ: الفت تنویر بخاری قسط اول۔ منٹو کا نام میں نے پہلی بار1944ء میں اس وقت سنا جب میں ملازمت کی تلاش میں پہلی مرتبہ دہلی آیا تھا۔ جنگ کی وجہ سے ہرگریجوایٹ وپوسٹ گریجوایٹ کو بھرتی کیا جارہا تھا۔میں […]

· 3 comments · ادب
سیاسی جدوجہد کے ساٹھ سال ،کوئی پچھتاوا نہیں

سیاسی جدوجہد کے ساٹھ سال ،کوئی پچھتاوا نہیں

لیاقت علی ایڈووکیٹ بیاتھل معیدالدین کٹی( بی۔ایم کٹی )کی خود نوشت پاکستان کی سیاسی تاریخ کا ایک بیانیہ تو وہ ہے جو ریٹائرڈ جرنیلوں ، اعلی اور کلیدی عہدوں پر فائز رہنے والے سابق بیورکریٹوں، مغربی ممالک بالخصوص امریکہ اور برطانیہ میں تعینات ہونے والے سفارت کاروں اور اقتداری سیاست کی شطرنج کے رسیا سیاست دانوں کی یاد داشتوں ،اخباری […]

· 1 comment · ادب
گرداب).ایک ایکٹ کاڈرامہ)

گرداب).ایک ایکٹ کاڈرامہ)

تحریر: خالد محمود منظر: ایک نہایت ہی پوش میڈیکل کمپلیکس کی لابی میں فارما سوٹیکل کمپنی کے نمائندے شہر کے ماہر ڈاکٹرز سے اپنی باری ملنے کے منتظر ہیں۔ان کی نظریں ڈاکٹر کے چیمبر کے وقفے وقفے سے کھلتے اور بند ہوتے دروازے پر جمی ہیں۔وہ کبھی اپنی شرٹ کی سلوٹیں درست کرتے ہیں اور کبھی اپنا ڈیٹیلنگ بیگ کھول […]

· 0 comments · ادب
Disclosed book on table at library

جو یاد رہا

ڈاکٹر پرویز پروازی لکھنؤ کے صحافی ، افسانہ نگار، ادبی رسالہ کتاب کے مدیر جناب عابد سہیل کی خودنوشت ’’جو یاد رہا‘‘کے عنوان سے اردو اکادمی دہلی کی جانب سے 2012 میں دہلی سے چھپی ہے۔ اکادمی کے سیکرٹری انیس اعظمی نے حرف آغاز میں لکھا ہے کہ ’’اکادمی نے فیصلہ کیا تھا کہ اکادمی تین مشاہیر ادب کو دو […]

· 0 comments · ادب
فیض بنام افتخار عارف

فیض بنام افتخار عارف

بیروت،۲۶مئی عزیزی افتخار عارف آپ نے عسکری مرحوم کی کتاب کے بارے میں رائے طلب کی ہے۔ دینی اور فلسفیانہ مسائل کے بارے میں ہم جیسے کم علم لوگوں کو حرف زنی کا حق نہیں پہنچتا اس لیے ہمارا لکھنا تنقید نہیں محض تاثرات ہیں۔ پہلاتاثر تو یہی ہے کہ اگر آپ کسی بھی مسئلے کے بارے میں پہلے ہی […]

· 2 comments · ادب
ایٹم بم، بھارت دشمنی اور خالصتان

ایٹم بم، بھارت دشمنی اور خالصتان

لیاقت علی ۔ ایڈووکیٹ اسے ستم ظریفی ہی کہا جاسکتا ہے کہ سید سبط الحسن ضیغم جن کی ’پہلی محبت‘ پنجابی زبان و ادب تھی ، کی شنا خت کا حوالہ ان کی اردو تحریریں بن رہی ہیں۔ سید مرحوم جو زندگی بھر پنجابی زبان کی ترقی و ترویج کے لئے کوشاں رہے ، اپنی زندگی میں شاید اپنی اردو […]

· 1 comment · ادب
مہر بیتی

مہر بیتی

ڈاکٹر پرویز پروازی مشہو ر صحافی جناب غلام رسول مہر کی خودنوشت ’’مہربیتی‘‘ کے عنوان سے محمد حمزہ فاروق نے مرتب کی اور الفیصل ناشران اردو بازار نے 2010 میں شائع کی ہے۔ غلام رسول مہر فرصت کے اوقات میں اپنی اولاد کو اپنی زندگی کے واقعات سناتے رہتے تھے۔ ان ہی واقعات کو ان کی اولاد نے مرتب کر […]

· 0 comments · ادب
“ابھی ہم خوبصورت ہیں”

“ابھی ہم خوبصورت ہیں”

ہمارے جسم اوراقِ خزانی ہو گئے ہیں اور ردائیں زخم سے آراستہ ہیں پھر بھی دیکھو تو ہماری خوشنمائی پر کوئی حرف اور کشیدہ قامتی میں خم نہیں آیا ہمارے ہونٹ زہریلی رُتوں سے کاسنی ہیں اور چہرے رتجگوں کی شعلگی سے آبنوسی ہو چکے ہیں اور زخمی خواب نادیدہ جزیروں کی زمیں پر اس طرح بکھرے پڑے ہیں جس […]

· 0 comments · ادب
گدان

گدان

منظور بلوچ گل خان نصیر 2014ء میں وہ آج بہت خوش تھا۔بڑا ہی مسرور،گنگنا رہا تھا۔کبھی چلتن کی چوٹیوں پر نظر ڈالتا،کبھی کوہِ مہردار کو غور سے دیکھتا۔۔۔۔اور پھر اپنی بھولی بسری یادوں کو ٹٹولتا رہتا۔۔ اْس کے سامنے ماضی تھا۔۔۔تکلیف سے بھرا ہوا۔۔۔اب اس کے صرف دو ہی دوست رہ گئے تھے۔۔۔ایک بائیں طرف ایک دائیں طرف کھڑا ،اسے […]

· 5 comments · ادب
براہوئی ادب:مکالمے کی ضرورت

براہوئی ادب:مکالمے کی ضرورت

منظور بلوچ جب بھی براہوئی ادب کی بات ہوتی ہے۔ تو ادب کے لفظ استعمال مشکلات پیدا کرتا ہے۔ اس لیے کہ لکھی جانے والی ہر چیز ادب نہیں ہوتی۔ لیکن ہمارا مسئلہ یہ ہے کہ براہوئی میں جو کچھ لکھا گیا اسے ادب سمجھا جائے خواہ یہ سانپ کے زہر سے بچنے کا ہڈی ہو۔ بدعت کے خلاف سرزنش […]

· 0 comments · ادب
امیر خسرو جرمنی میں

امیر خسرو جرمنی میں

ڈاکٹر پرویز پروازی ابھی کچھ عرصہ قبل ناظر فاروقی صاحب کی خودنوشت دیکھی اس کا عنوان تھا’’لکھنؤ سے لندن تک عمر خیام کی رباعیوں کے ہمراہ‘‘ اس ساری کتاب میں عمر خیام کی رباعیوں کا ذکر تک نہیں تھا۔ اب ڈاکٹر مشتاق اسماعیل صاحب کی یادداشتوں کا مجموعہ آیا ہے’’امیر خسرو جرمنی میں‘‘۔ اس میں امیر خسرو کا صرف اتنا […]

· 1 comment · ادب