ادب

زندہ جاوید عقیدہ:اصغر علی انجینئر کی خود نوشت

زندہ جاوید عقیدہ:اصغر علی انجینئر کی خود نوشت

تبصرہ : لیاقت علی ایڈووکیٹ بھارت کےسابق نائب صدر حامد انصاری نے معروف دانشور اور بین الاقوامی رواداری اور ہم آہنگی کے مبلغ اصغر علی انجینئر کی خود نوشت’ زندہ جاوید عقیدہ ‘کی تقریب رونمائی سے خطاب کرتے ہوئے انھیں اس عہد جدید کا سپنوزا (24نومبر 1632۔21۔فروری 1677) قرار دیا تھا ۔ ان کا کہنا تھا کہ صدیوں پر محیط […]

· 0 comments · ادب
ماسکو کی ایک رات

ماسکو کی ایک رات

انور عظیم برف گر رہی تھی اور ماسکو کی رات کو پراسرار بنا رہی تھی، ہماری کار یوکرائنا ہوٹل سے نتاشہ کے گھر کی طرف بھاگ رہی تھی۔ سڑک پر تازہ تازہ سفید برف بچھی ہوئی تھی۔ نتاشہ اور فیض پچھلی سیٹ پر بیٹھے ہوئے تھے ۔ نتاشہ کے کٹے ہوئے گھنگھریالے بال تھے اور گردن پر جھول رہے تھے […]

· 0 comments · ادب
مارکس کی شاعری 

مارکس کی شاعری 

لیاقت علی  فلسفہ اور معاشیات کے شعبوں میں کارل مارکس کسی تعارف کا محتاج نہیں ہے اوریہ کہنا کوئی مبالغہ آرائی بھی نہیں ہے کہ فلسفے اور اکنامکس کی کوئی تاریخ مارکس کا ذکر کئے بغیر مکمل نہیں سمجھی جاسکتی ۔مارکس کے سماجی اور معاشی نظریات کے گرد قائم دنیا میں سینکڑوں سیاسی ،ثقافتی اور تنظیمیں اور گروپس اپنے اپنے […]

· 0 comments · ادب
جوتے ۔ ایک ایرانی فلم بچہ ہائے آسمان ‘سے ماخوذ -2

جوتے ۔ ایک ایرانی فلم بچہ ہائے آسمان ‘سے ماخوذ -2

سبطِ حسن 7 ایک بجے کے قریب سعید نے سکول کا بستہ اٹھایا اور گلیوں کو بازار کے ساتھ ملانے والے چوک میں آکھڑا ہوا۔ وہ کرن کے آنے سے بہت پہلے یہاں آگیا تھا۔ وہ کچھ دیر بستہ کمر پر لادے کھڑا رہا۔ تھک گیا تو ایک دکان کے چبوترے کے ساتھ ٹیک لگا کر کھڑا ہو گیا۔ پھر، […]

· 0 comments · ادب
ایک سیاسی کارکن کی یاد داشتیں

ایک سیاسی کارکن کی یاد داشتیں

تبصرہ : لیاقت علی ایڈووکیٹ رانا محمد اظہر کا شمار بلاشبہ پاکستان کے معمر ترین سیاسی کارکنوں میں کیا جاسکتاہے۔ وہ ان معدودے چند درجن افراد میں شامل تھے جنھوں نے نومبر 1967 میں ڈاکٹر مبشر حسن کی رہائش گاہ گلبرگ لاہور پر پاکستان پیپلز پارٹی کی بنیاد رکھی تھی۔ 84 سالہ رانا اظہر قیام پاکستان سے قبل متحدہ پنجاب […]

· 0 comments · ادب
ساقی ۔۔۔۔۔ جنس اور مذہب

ساقی ۔۔۔۔۔ جنس اور مذہب

 انٹرویو : خالد سہیل سہیل: ساقی فاروقی صاحب ! ہمارے معاشرے میں دو موضوعات ایسے ہیں جن پر کھل کر بات نہیں ہو سکتی۔ایک جنس ہے اور دوسرا مذہب۔ آپ نے ان دونوں موضوعات پر کھل کر باتیں کی ہیں‘ اپنے خیالات اور نظریات کا اظہار کیا ہے اور ان ٹیبوزTABOOS کو توڑا ہے۔ میں آپ کے نظریات کے ارتقائی سفر […]

· 3 comments · ادب
ساقی فاروقی کی شاعری اور انسان کا تاریک رخ

ساقی فاروقی کی شاعری اور انسان کا تاریک رخ

ڈاکٹر خالد سہیل جب میرے دوست مجھ سے پوچھتے ہیں کہ ساقی فاروقی کی شاعری مجھے کیوں پسند ہے تو میرے ذہن میں بہت سے خیالات گردش کرنے لگتے ہیں۔ میں انہیں بتاتا ہوں کہ اردو کے بہت سے روایتی شاعر انسان کی زندگی اور شخصیت کے روشن اور درخشاں پہلوؤں پر اپنی توجہ مرکوز کرتے ہیں‘ وہ گل و […]

· 0 comments · ادب
ساقی فاروقی کی پاپ بیتی

ساقی فاروقی کی پاپ بیتی

ڈاکٹر خالد سہیل ساقی فاروقی کی آپ بیتی پڑھ کر مجھے پہلی دفعہ اندازہ ہوا کہ وہ اتنے ہی بڑے نثر نگار ہیں جتنے بڑے شاعر۔ انہوں نے اردو زبان کے ساتھ دوستی ہی نہیں کی محبت بھی کی ہے اسی لیے انہوں نے اردو زبان میں اعلیٰ ادب تخلیق کیا ہے۔انہوں نے اپنی آپ بیتی میں اردو زبان کا […]

· 0 comments · ادب
رہبر کبیرنورمحمد ترہ کئی کا بین الاقوامی تعارف

رہبر کبیرنورمحمد ترہ کئی کا بین الاقوامی تعارف

تبصرہ :پائندخان خروٹی دنیا جانتی ہے کہ رہبر کبیر استاد نورمحمد ترہ کئی( 15 July 1917 150 8 October 1979) صرف سیاستدان نہیں بلکہ علم وادب کے گلشن کا ایک عہدساز ادیب بھی تھے ۔ انہوں نے پشتو علم وادب میں تنقیدی بلکہ مارکسی شعور کو فروغ دیتے ہوئے گراں قدر اور ٹھوس خدمات سرانجام دی ہیں ، وہ کم […]

· 2 comments · ادب
دیوتا کا وردان

دیوتا کا وردان

کوی شنکر وہ اماوس کی ایک رات تھی جب میں نے خالی بوتل سمندر میں پھینکی تھی اور اپنی محرومیوں پر قسمت کو بھرا بھلا کہنے لگا۔ رات کے سناٹے میں سمندر کی لہریں شورمچا کر میری سوچ پر تانڈو ناچ کر رہی تھیں۔ میری آواز پر جب لہریں حاوی ہونے لگیں تو میں نے تنگ آکر اپنی پیٹھ سمندر […]

· 0 comments · ادب
ادبی تنقید، مقصد یت یا زندگی سے فرار

ادبی تنقید، مقصد یت یا زندگی سے فرار

تحریر وتحقیق :۔ پائند خان خروٹی سیانے کہتے ہیں اور سچ ہی کہتے ہیں کہ سوال پوچھنا آدھی عقل ہے ۔سوال تو ہر انسان کے ذہن میں اُبھرتے ہیں ۔ کبھی کسی تجسُس کے باعث ، کبھی اردگرد کے حالات کے بارے میں شکوک وشبہات کے رد عمل کے طور پر کبھی علمی تشنگی کو کم کرنے کیلئے ، مگر […]

· 4 comments · ادب
شراپ۔۔ مختصر کہانی

شراپ۔۔ مختصر کہانی

کوی شنکر آج میں ایک گنجان بازارسے گذر رہا تھا۔ اچانک مجھے ایک آواز سنائی دی۔ ‘سنو۔ ۔ ۔ ادھر آؤ۔ ۔ ۔ ’ میں نے اس آواز کو سنا ان سنا کردیا۔ میں نے دوبارہ چلنا شروع کیا، ابھی چند قدم ہی اٹھائے تھے کہ پھر وہی آواز سنائی دی ‘ میں تم سے مخاطب ہوں۔ ۔ تم کہاں جا رہے […]

· 0 comments · ادب
جوتے ۔ ایک ایرانی فلم بچہ ہائے آسمان ‘سے ماخوذ -1

جوتے ۔ ایک ایرانی فلم بچہ ہائے آسمان ‘سے ماخوذ -1

سبطِ حسن سعید، دس گیارہ برس کا ٹھنگنے قد کا لڑکا تھا۔ اس کے چہرے میں سب سے نمایاں اس کی کوّے جیسی تیز اور بے قرار آنکھیں تھیں۔ ماتھا، چوڑا مگر سر کی طرف زیادہ لمبا نہ تھا۔ بال، نہ تراشنے کی وجہ سے لمبے اور نہ نہانے کی وجہ سے گندے اور الجھے ہوئے تھے۔ اس کی ٹانگیں، […]

· 0 comments · ادب
ازلی رشتہ 

ازلی رشتہ 

کوی شنکر عورت اور مرد آج بات کرتے کرتے پھر لڑ پڑے تھے۔ دونوں جب لڑتے ہیں توخوب لڑتے ہیں اور ایک دوسرے سے بات کرنا تک گوارا نہیں کرتے اور جب دوست بنتے ہیں تو ایسا لگتا ہے کہ جیسے کبھی لڑے ہی نہ تھے۔ خوب دوستی نبھاتے ہیں اور ایک دوسرے کو برداشت کرتے ہیں۔ دونوں کا یہ […]

· 0 comments · ادب
نامرد!۔

نامرد!۔

(اشفاق آذ ر ، سندھی سے ترجمہ: قاسم کیہر) جب سے ھم نے اپنے سارے خواب نامردوں کی جھولی میں ڈال دیے ہیں تب سے ہمارے آنکھوں میں موتیا اتر آیا ہے! تب سے ھمارے حوصلوں کا زخمی گھوڑا اپنی سرکشی کے انجام پر نادم ھے جنگ کے نغارے جیسی ھماری جوانی اب کسی قدیم داستان کا حصہ لگتی ہے! […]

· 1 comment · ادب
ناول ’’ایک حصہ عورت‘‘ ،جس کے مصنف کو خود اپنی موت کا اعلان کرناپڑا

ناول ’’ایک حصہ عورت‘‘ ،جس کے مصنف کو خود اپنی موت کا اعلان کرناپڑا

طارق احمدمرزا اصل ناول تو تامل زبان میں ’’مادھروبھاگن‘‘ کے نام سے بھارت میں 2010 میں شائع ہوا تھا جبکہ اس کا انگریزی ترجمہ 2015 میں’’ون پارٹ وومن‘‘ یعنی ’’ ایک حصہ عورت‘‘کے عنوان سے پینگوئن بکس نے شائع کیا جسے گزشتہ برس بہترین ترجمہ شدہ کتاب کے ایوارڈ کے لئے نامزدکیاگیا۔ مصنف پیرومل موروگن نے اس ناول میں برصغیر […]

· 0 comments · ادب
کٹورہ۔۔۔ افسانہ

کٹورہ۔۔۔ افسانہ

انیس زبیری۔ ٹورنٹو گاڑی تیزی سے دوڑ رہی تھی ۔ میں خیالات میں گم اور نظریں  کھڑکی سے باہر ۔ رام گڑھ کو چھو ڑ ے کتی مّدت ہوئی اب یاد بھی نہیں ۔ ”اب کب آؤ گے “ چلتے ہوئے میری ماں کا یہ کہنا مجھے آج تک یاد ہے۔ گھر سے نکلتے وقت چہرے پر بشاشی تھی سر کے […]

· 1 comment · ادب
مشرقی گھگو گھوڑے اور امریکہ

مشرقی گھگو گھوڑے اور امریکہ

طارق ضیا جیری کو بیٗر پینے کے ساتھ قیمہ بھرے دیسی نان کھانے کا بے حد شوق ہے۔ قیمہ بھرے نان سے پہلا تعارف تو میں نے ہی کرایا تھا لیکن اسکے ساتھ جو وہ پیتا ہے وہ خالص اسی کی تخلیقی آمیزش ہے۔ ہم جیسے ہی سی ایٹل کے ایک قدیمی حصے میں واقع سردار جی کے ریستوران میں […]

· 2 comments · ادب
میرتقی میرؔ اورپطرسؔ بخاری کی سگ شناسی

میرتقی میرؔ اورپطرسؔ بخاری کی سگ شناسی

طارق احمدمرزا میرتقی میرؔ صاحب کو(جو میرے نزدیک اپنے زمانے کے ایک ترقی پسند’’بلاگر‘‘تھے) ایک مرتبہ برسات میں مجبوراً ایک سفر کرنا پڑ گیاتھا۔سفرکیا تھاسمجھیے کہ جبری طور پر سیلاب زدگان میں شامل ہوکر ایک بستی میں پہنچا دئے گئے تھے۔اس یادگار سفراور مذکورہ بستی کا حال آپ نے ایک مثنوی بعنوان ’ ’ نسنگ نامہ ‘‘ میں لکھا۔ معلوم […]

· 1 comment · ادب
مہنگی کرامات

مہنگی کرامات

سبط حسن شہر سے باہر نکل جائیں تو دیہات نظر آنے لگتے تھے۔ دیہات کے درمیان چند کلومیٹر کا فاصلہ تھا اور ان کے درمیان ایک چرچ تھا۔ دیہات میں رہنے والوں کی اکثریت عیسائیوں کی تھی۔ وہ اس چر چ میں، ہر اتوار کوآکر عبادت کرتے تھے۔ چرچ میں دوسرے لوگوں کے علاوہ ایک بڑا پادری تھا۔ یہ لوگ […]

· 0 comments · ادب