تاریخ

ابن رشد ۔ حقوق نسواں کا پہلاعلمبردار

ابن رشد ۔ حقوق نسواں کا پہلاعلمبردار

زکریاورک ، کینیڈا ابو ولید محمد ابن رشد (1126-1198)کی ولادت با سعادت قرطبہ کے معزز،معروف اور فقہاء کے خاندان میں ہوئی تھی۔ آپ آزادی نسواں کے یورپ میں پہلے علمبردار تھے۔ عہد وسطیٰ کے یورپ کو آپ کے آئیڈیاز نے زبردست رنگ میں متاثر کیا۔مثلاََ یورپ میں تیر ھویں صدی میں لوگ خیال کرتے تھے کہ موت کے بعد روح […]

· 2 comments · تاریخ
برصغیر کی مسلم ذہنیت

برصغیر کی مسلم ذہنیت

عبدالکریم عابد جب مسلم رہنما اور علماء اپنی زبان کو شائستہ نہیں رکھ سکتے تھے تو قوم میں شائستگی اور وسیع المشربی یارواداری کیسے پیدا کرسکتے تھے۔ سرفیروز خان نون انگلستان کے تعلیم یافتہ آدمی تھے، گھر میں یورپین بیوی تھی مگر لیگی لیڈر کی حیثیت سے انہوں نے بیان دیا تو کہا کہ ہم ہندوؤں کو ہلاکو او رچنگیزبن […]

· 2 comments · تاریخ
احمدی اور پاکستان میں مذہبی امتیاز کی سیاست

احمدی اور پاکستان میں مذہبی امتیاز کی سیاست

انٹرویو: علی عثمان قاسمی کوئی چالیس سال پہلے ، ۱۹۷۴ میں،تہتر کے آئین میں دوسری ترمیم کی گئی تھی جس کے مطابق احمدیوں کو غیر مسلم قراردیا گیا۔ یہ اصل میں احمدیوں کے خلاف سماجی وسیاسی مقاطعہ کرنے کی کوششوں کا نتیجہ تھا جو ۱۹۵۲ کی متشدد اینٹی احمدیہ تحریک کے بعد شروع ہوگئیں تھیں۔ دوسری ترمیم کے بعد علما […]

· 3 comments · پاکستان, تاریخ
آزاد خیالی کیا ہے؟

آزاد خیالی کیا ہے؟

ڈاکٹر مبارک علی فرانسیسی انقلاب نے جہاں سیاسی اور سماجی تبدیلیاں کیں وہیں اس نے نظریات و افکار کو بھی جنم دیا۔ فرانس کی نیشنل اسمبلی میں جو اراکین دائیں جانب بیٹھے ہوتے تھے وہ قدامت پسند نظریات کے حامل تھے جبکہ بائیں جانب بیٹھنے والے اراکین انقلابی اور ریڈیکل نظریات کے حامی تھے۔ اس وجہ سے دائیں اور بائیں […]

· 0 comments · تاریخ
ایک پاکستانی کی شناخت کا مسئلہ

ایک پاکستانی کی شناخت کا مسئلہ

جمیل خان میری پیدائش جس گھرانے میں ہوئی اس کا تعلق ایک ایسی لسانی برادری سے تھا، جسے نقل مکانی کے مرحلے سے گزرنا پڑا تھا۔ شمالی اور جنوبی ہندوستان کی مسلمان اقلیت میں یہ رویہ پہلے سے ہی موجود تھا کہ وہ اپنی اقلیتی حیثیت کی جھینپ مٹانے، اپنے نام نہاد احساسِ برتری اور جھوٹے گھمنڈ کو فروغ دیتے […]

· 0 comments · تاریخ
ہندوستانی مسلمان

ہندوستانی مسلمان

وسیم الطاف ولیم ڈیلرمپل نے اپنی کتاب ’’دی لاسٹ مغل‘‘ (آخری مغل) میں 1857کے خونی بغاوت کے نتیجے میں بھارتی مسلم اشرافیہ کی حکمرانی کے خاتمے کا احوال پیش کیا ہے۔ اگرچہ آخری مغل حکمران بہادر شاہ ظفر برطانیہ مخالف تحریک کے حوالے سے تحمل مزاج بے اختیار حکمران تھے لیکن مجموعی طور پر پوری مسلم برادری کو برطانوی سلطنت […]