کشمیر : یہ ’’کرفیو نائٹ‘‘ کب ختم ہو گی

  بیرسٹرحمید باشانی بیس برس قبل میں سرینگر گیا تھا۔  وہاں مجھے اپنے ادارے کی طرف سے بھارت کے خلاف برپا ہونے والی بغاوت کی خبریں ارسال کرنے کے لیے بھیجا گیا تھا۔  یہ ایک انتہائی خوبصورت جگہ تھی۔  ڈل جھیل میں تیرتے ہوئے شکارے،  جھیل کے کنارے چنار اور بید کے خوبصورت درخت، ان درختوں کے پیچھے بادام اور […]

· 0 comments · کالم